پولیس نے لاش کو تحویل میں لے کر موت کی وجوہات جاننے کے لیے تحقیقات شروع کردیں

اسلام آباد(-انٹرنیشنل پریس ایجنسی۔04 فروری۔2020ء) وفاقی دارالحکومت میں پولیس کو اسلام آباد میں ایک درخت سے وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) کے ڈرائیور کی لٹکی ہوئی لاش ملی ہے.درخت سے لٹکی ہوئی شخص کی لاش مارگلہ پولیس اسٹیشن کی حدود میں سیکٹر جی-2/9 میں ابن سینا روڈ کے بالمقابل گرین ایریا سے ملی واقعے سے متعلق حاصل ہونے والے ورک آئی ڈی سے ظاہر ہوتا ہے کہ متوفی ایف آئی اے میں بطور اسسٹنٹ سب انسپکٹر (اے ایس آئی) ڈرائیور کام کرتا تھا. علاوہ ازیں پولیس نے لاش کو اپنی تحویل میں لے کر موت کی وجوہات جاننے کے لیے تحقیقات شروع کردیں پولیس کا کہنا ہے کہ وہ ممکنہ خودکشی یا قتل دونوں پہلوﺅں سے معاملے کی تحقیقات کر رہی ہے اس حوالے سے اسلام آباد پولیس کے ترجمان کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا کہ متوفی سیکٹر جی-2/9 کا رہائشی تھا. بیان میں کہا گیا کہ جیسے ہی درخت پر لٹکی لاش کی اطلاع ملی اسٹیشن ہاوس افسر مارگلہ اور ہومی سائڈ یونٹ کے افسران جائے وقوع پر پہنچ گئے بعد ازاں مزید کارروائی شروع کرنے سے قبل متوفی کی لاش کو ہسپتال منتقل کردیا گیا. واضح رہے کہ اس سے قبل اسلام آباد میں نامعلوم افراد نے فائرنگ کرکے پاک فوج کے ایک افسر کو قتل کرنے کا واقعہ پیش آیا تھافائرنگ کا یہ واقعہ تھانہ کراچی کمپنی کی حدود میں پیش آیا تھا جہاں نامعلوم ملزمان نے ایک شخص پر فائرنگ کردی اور موقع سے فرار ہوگئے تھے. مقتول کی شناخت لاریب کے نام سے ہوئی جو پاک فوج کا افسر تھا اور اس کی پوسٹنگ اٹک میں تھی. تحقیقات کے دوران یہ بات سامنے آئی کہ پاک فوج کے افسر پارک میں بیٹھے تھے کہ 2 نامعلوم افراد نے فائرنگ کردی جس کے نتیجے میں سر پر گولی لگی اور وہ موقع پر ہی جاں بحق ہوگئے تھے.